بھارت نے میزائل نصب کردیئے، فوج بڑھا دی، چینی طیاروں کی پروازیں

نئی دہلی، بیجنگ (کے پی آئی ) بھارت نے مشرقی لداخ سیکٹر پر اپنا جدید ترین میزائل ڈیفنس سسٹم لگا دیا، چین کی جانب سے ایل اے سی پر طیاروں اور ہیلی کاپٹروں کی نقل و حرکت جاری ہے ، بھارتی حکومتی ذرائع نے کہا بھارت اپنے دوست ملک سے بھی جلد ہی انتہائی جدید ائیر ڈیفنس سسٹم بھی حاصل کر نے جارہا ہے ۔دریں اثنا مشرقی لداخ میں حقیقی کنٹرول لائن پر ہندوستان اور چین کے درمیا ن جاری فوجی تعطل کے درمیان زمینی حالات کا جائزہ لینے کے بعد بھارتی فوجی سربراہ منوج مکند نروانے نے وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ کو لداخ دورہ کے بعد انہیں تازہ صورتحال سے واقف کرایا، سنگھ روسی دورے سے واپس آئے ہیں، لداخ کے دو دن کے دورے پر گئے جنرل نروانے نے گلوان وادی میں چینی فوجیوں کے ساتھ جھڑپ میں زخمی ہوئے فوجوں سے ہسپتال جاکر ملاقات کی۔ دریں اثنا چینی فوج نے ایل اے سی کے مشرقی سیکٹر میں نقل و حرکت کی ہے ، ایک میڈیا رپورٹ کے مطابق چائنیز پیپلز لبریشن آرمی کے دستوں کو حقیقی خط قبضہ(ایل اے سی) کے

یہ بھی پڑھیں :وادی گلوان میں چین کی عسکری نقل و حرکت میں اضافہ

مشرقی سیکٹر میں اسی ہفتہ اپنی پیٹھ پر آہنی سلاخیں لے جاتے دیکھا گیا ، پی ایل اے فوجی گزشتہ ماہ کے اوائل شمالی پشتہ پان گانگ سو پر جھڑپ کے دوران آہنی سلاخوں اور پتھروں سے لیس تھے ، دوسری طرف چین کے جواب میں بھارت نے متنازع سرحد پر فوجیوں کی تعداد بڑھا دی ۔ بھارتی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا چین نے بڑی تعداد میں فوج اور عسکری تنصیبات کا اضافہ کیا ، دریں اثنا چین میں بھارت کے سفیر وکرم مصری نے کہا ہے کہ چین اپنی ذمہ داری سمجھے اور ایل اے سی پر اپنی طرف جائے ، امید ہے چین تناؤ کو کم کرنے کیلئے ایل اے سی کے اپنی طرف واپس چلا جائے گا ، زمینی سطح پر چینی فوجیوں نے جو اقدام کیا ہے اس سے دونوں ممالک کے تعلقات میں اعتماد میں کمی آئی ہے

(Visited 37 times, 1 visits today)

Also Watch