شکست کے بعد ٹرمپ کو ایک اور جھٹکا، میلانیا وائٹ ہاؤس سے نکلنے کیلئے دن گننے لگی

واشنگٹن : امریکی انتخابات میں شکست کے بعد ڈونلڈ ٹرمپ کی اہلیہ میلانیا نے شوہر سے طلاق لینے پر غور کررہی ہے، میلانیا کے قریبی ذرائع کا کہنا ہے کہ صدر سے علیحدگی کے لئے میلانیا دن گن رہی ہیں ۔:

تفصیلات کے مطابق الیکشن کی شکست کے بعد امریکی صدر ٹرمپ کو ایک اور جھٹکا لگنے کا امکان ہے، اہلیہ میلانیا ٹرمپ نے شوہر سے طلاق لینے کے فیصلے پر سوچ بچار شروع کردیا ہے۔

برطانوی اخبار کی رپورٹ میں ڈونلڈ ٹرمپ اور ان کی اہلیہ میلانیا ٹرمپ کے درمیان گزشتہ چار سال سے کشیدہ تعلقات کا ذکر کرتے ہوئے وائیٹ ہاؤس کی سابق ملازمہ کے دعووں کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ میلانیا ٹرمپ شوہر سے طلاق لینے پر غور ر رہی ہیں۔

ڈونلڈ ٹرمپ کی اہلیہ میلانیا ٹرمپ کی سابق سینئر مشیر اسٹیفنی ووک آف نے دعویٰ کیا ہے کہ میلانیا اپنے شوہر ٹرمپ سے طلاق لے لیں گی، وہ طلاق کے بعد اپنے بیٹے کو بھی جائیداد میں برابر حصہ دلوانے کے معاملے پر مشاورت کر رہی ہیں۔

امریکی صدر جو بائیڈن کی سیاسی اور ذاتی زندگی

دوسری جانب ٹرمپ حکومت کی سابق عہدیدار اومروسا مینیگولٹ نیومین نے بھی دعویٰ کیا کہ ڈونلڈ اور میلانیا ٹرمپ کی 15 سالہ شادی “ختم” ہوچکی ہے اور وہ صدر سے علیحدگی کے لئے دن گن رہی ہیں۔

اس سے قبل میلانیا ٹرمپ نے انہیں طلاق کیوں نہیں دی؟ اس کا جواب دیتے ہوئے سابق معاون نے کہا کہ اگر وہ عہدے پر ہی رہتے تو وہ ڈونلڈ ٹرمپ کو “سزا” دینے کا راستہ ڈھونڈ لیتی۔

ایک اور سابقہ ​​معاون نے بتایا کہ 2016 میں جب ڈونلڈ ٹرمپ نے صدارتی انتخابات میں کامیابی حاصل کی تھی تو میلانیا ٹرمپ پھوٹ پھوٹ کر روئی تھیں، کیونکہ انہیں کبھی بھی ٹرمپ کی جیت کی امید نہیں تھی”۔ تاہم میلانیا نیویارک سے وائٹ ہائوس منتقل ہونے کیلئے پانچ ماہ انتظار کیا۔

خیال رہے کہ امریکا کے صدارتی انتخاب میں ڈیموکریٹک امیدوار جو بائیڈن نے ڈونلڈ ٹرمپ کو ناقابل دے کر امریکا کے 46 ویں صدر منتخب ہوگئے۔

(Visited 100 times, 1 visits today)

Also Watch

?