کورونا میں ملازمتیں کھونے والے پاکستانیوں کو کاروبار کیلیے قرض کی فراہمی، بڑا معاہدہ طے

اسلام آباد : پاکستان اور جرمنی کے درمیان 3 ملین یوروز کا معاہدہ ہوگیا، جس کے تحت کورونا کے باعث ملازمتیں کھونے والے پاکستانیوں کو کاروبار میں آسانی کیلئے قرضے فراہم کیے جائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق معاون خصوصی اوورسیز پاکستانیز زلفی بخاری کی پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا پاکستانی جرمنی کےدیے گئے 3ملین یوروز کی امداد سے کاروبار شروع کر سکیں گے، 3 ملین یوروز تکنیکی تربیت دینے اور کاروبار میں آسانی کے لیے استعمال ہوں گے۔

زلفی بخاری کا کہنا تھا کہ کورونا کی وجہ سے ملازمتیں کھونے والے پاکستانی کی دوبارہ بحالی کی جائے گی، بیرون ملک سے آنے والوں کو چھوٹے کاروباری قرضے بھی فراہم کیے جائیں گے۔

معاون خصوصی نے کہا کہ معاہدے سے نوجوانوں کی مائیکرو فنانسنگ کی جا سکے گی، معاہدہ بہت پہلے ہو جاتا لیکن کورونا کی وجہ سے لیٹ ہوگیا، پاکستانیوں کی بحالی کے لیے یہ معاہدہ انتہائی اہم ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ یو اے ای کا دورہ کامیاب تھا، دورے پر وزیراعظم کوبریف کیا، یو اے ای میں 60 ہزار پاکستانی پھنسے ہیں، پہلا وزیر افرادی قوت تھا، جس نے یو اے ای کا دورہ کیا، ہم نے کورونا کے دوران کسی بھی ایئر لائنز کے مقابلے میں سستے ٹکٹ دیے۔

نواز شریف کے حوالے سے زلفی بخاری نے کہا نواز شریف کیلئے بہتر ہے وہ کمرے میں ہی رہیں،باہر نہ ہی نکلیں تو اچھا ہے۔

جرمن سفیر برنہارڈ شلاغک نے کہا جرمنی پاکستانیوں کو دوبارہ ملازمتوں کے حصول میں مدد دے گا، معاہدے کے تحت اوورسیز پاکستانیز فاونڈیشن کو ٹیکنیکل معاونت دی جائے گی، پاکستانیوں کی ٹیکنیکل ٹریننگ میں جرمنی مدد کرے گا۔

جرمن سفیر کا کہنا تھا کہ پاکستانی نوجوانوں کو ہوٹلنگ اور سیاحت کے شعبے میں ٹریننگ دی جائے گی، پاکستانیوں کو جرمن زبان کا کورس کرایا جائے گا، معاہدے سے پاکستانی جاب مارکیٹ کو فروغ ملے گا

(Visited 93 times, 1 visits today)

Also Watch