گنجے سر سے بجلی پیدا کرنے کا منصوبہ

نئی تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ گنجے مردوں کے سر پر سورج کی روشنی شمسی توانائی پیدا کر سکتی ہے۔

گنجا سر شمسی خلیوں کے مقابلے میں شمسی توانائی کو تبدیل کرنے میں زیادہ کارآمد ہے(اے ایف پی)

نئی تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ گنجے مرد قابل تجدید شمسی توانائی پیدا کرنے کے لیے اپنے سر کا استعمال کر سکتے ہیں۔

سپین کی ویلنسیا یونیورسٹی کے اشتراک سے ایک ہسپانوی سٹارٹ اپ کمپنی نے ایک دلچسپ پروجیکٹ پیش کیا ہے جس میں گنجے مردوں کے سر پر سورج کی روشنی شمسی توانائی پیدا کر سکتی ہے۔

اس ڈیزائن میں کھوپڑی کو سطح کے طور پر استعمال کیا جاتا ہے جو سورج کی کرنوں کو اکٹھا کرتی ہے اور پھر اسے بجلی میں تبدیل کرتی ہے تاکہ اس شخص کے پاس چھوٹی بیٹریوں میں توانائی ذخیرہ ہو جائے۔

ذخیرہ شدہ توانائی بعد میں موبائل فون کو چارج کرنے سمیت مختلف کاموں کے لیے استعمال کی جا سکتی ہے۔

ایسا کرنے کے لیے لیبارٹری میں مائیکروچپس کو سر پر رکھا جاتا ہے جو بعد میں استعمال کے دوران سورج کی روشنی کو ذخیرہ شدہ بجلی میں بدل دیتی ہیں۔

انوویٹرز میگزین کے مطابق گنجے شخص کا سر شمسی خلیوں کے مقابلے میں شمسی توانائی کو تبدیل کرنے میں زیادہ کارآمد ہیں جو بجلی پیدا کرنے کے لیے استعمال ہوتے ہیں کیونکہ وہ طاقت اور رفتار سے سورج کی روشنی کی عکاسی کرتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق تجربہ 42 مردوں پر کامیابی کے ساتھ کیا گیا۔ کھوپڑی میں مائیکروچپ لگانے کے لیے بس ایک مختصر آپریشن کی ضرورت ہے۔

(Visited 80 times, 1 visits today)

Also Watch

?